مقبوضہ وادی میں لوگوں کے گھر جلائے جا رہے ہیں، مشعال ملک

مشال ملک نے لاہور میں کشمیر ہیومن رائٹس والنٹیئرز موومنٹ کی لانچنگ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پہلی بار میرے خاوند یاسین ملک نے بھارتی فوج کے خلاف ہتھیار اٹھایا تھا اور آپ کے ہاتھ میں بندوق ہو یا قلم لیکن آپ کی منزل ایک ہوتی ہے۔

انہوں ںے مقبوضہ کشمیر کے حالات سے آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ وہاں بہت عزتیں لوٹی جا رہی ہیں اور گھر جلائے جا رہے ہیں تاہم پوری نہتی قوم ہندوستان کی دہشتگرد فوج کا مقابلہ کر رہی ہے۔

مشعال ملک نے کہا کہ پاکستان اسی صورت میں بچ سکتا ہے جب آپ کشمیریوں کے لیے جاگیں گے کیونکہ ہندوستان کو کشمیر کی زمین کا لالچ ہے انہیں کشمیریوں سے کوئی غرض نہیں ہے جبکہ بھارت کے 8 حصوں میں بھی آرٹیکل ہٹانے کی تحریک چل رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ آپ کا دشمن اتنا بزدل ہے جو نہتے لوگوں پر ظلم کر رہا ہے، مذہب کے نام پر کسی کو قتل کرنا یا حقوق چھیننا کوئی انسانیت نہیں ہے۔

حریت رہنما یاسین ملک کی صحت سے متعلق آگاہ کرتے ہوئے مشعال ملک نے کہا کہ میرے خاوند کو پنجرے میں بند کیا ہوا ہے، انہیں قید تنہائی دی گئی ہے انہیں آگرہ کے مینٹل اسپتال میں رکھا گیا۔

انہوں نے کہا کہ ہماری لاشیں گرتی رہیں لیکن یہاں امن کی باتیں چلتی رہیں۔ پاکستان کو کون دیمک کی طرح کھا رہا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *