بھارت میں کشمیریوں کے حق میں دعا کرنا بھی جرم بن گیا

ممبئی (ویب ڈیسک) آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین کے رہنما وارث پٹھان کو کشمیریوں کے حق میں دعا کرانے کی پاداش میں ممبئی سے گرفتار کر لیا گیا ہے۔

وارث پٹھان نے جنوبی ممبئی کے علاقہ مادن پورہ کی مسجد میں نماز جمعہ کی ادائیگی کے بعد جموں و کشمیر کی عوام اور کولہا پور متاثرین کے لیے خصوصی دعا کرائی جس کے بعد پولیس نے انہیں گرفتار کر لیا۔

آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین کے رہنما وارث پٹھان ممبئی سے مہاراشتر کی صوبائی اسمبلی کے رکن بھی ہیں۔

واضح رہے کہ 6 اگست 2019 کو بھارت نے کشمیر کی خصوصی حیثیت کے حوالے سے اپنے آئین کی شق 370 کا خاتمہ کر کے اسے دو حصوں لداخ اور کشمیر میں تقسیم کر دیا اور دونوں ریاستوں کو مرکزی حکومت کے ماتحت کر دیا ہے۔

مودی سرکار کے اس اقدام کے باعث کشمیری عوام میں غم و غصہ کی شدید لہر پائی جاتی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *