کراچی سمیت سندھ بھر میں مون سون کی بارش سے جل تھل ایک ہوگیا

کراچی (این اے) کراچی سمیت سندھ کے دیگر شہروں میں مون سون کی بارش سے موسم سہانا ہوگیا اور شہریوں کے چہرے خوشی سے کھل اٹھے۔

کراچی میں تیز بارش سے گرمی کا زور ٹوٹ گیا اور لوگوں نے ابرِ رحمت برسنے پر اللہ کا شکرادا کیا۔ تاہم بارش کا چھینٹا پڑتے ہی کئی علاقوں کی بجلی بند ہوگئی اور نشیبی علاقے زیر آب آگئے۔ سڑکوں پر پانی کھڑا ہونے سے ٹریفک کی روانی متاثر رہی اور شہریوں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔

برسات کے باعث طلبہ کو درپیش مشکلات کے پیش نظر متعدد نجی اسکولوں نے چھٹی دے دی جبکہ دفاتر میں بھی حاضری معمول سے کم رہی اور متعدد کاروباری مراکز بھی بند رہے۔ شہر قائد میں سب سے زیادہ بارش گلشنِ حدید میں ریکارڈ کی گئی۔

لیاقت آباد مارکیٹ میں 12 دکانیں جل گئیں

بارش کے دوران ناخوش گوار واقعات بھی پیش آئے۔ لیاقت آباد سپر مارکیٹ میں شارٹ سرکٹ کے باعث آگ لگ گئی جس سے 12 سے زائد دکانیں جل کر خاکستر ہوگئیں۔ دکانداروں نے کہا کہ کے الیکڑک کو وقت پر اطلاع دی مگر عملہ تاخیر سے پہنچا۔

کرنٹ لگنے سے 4 افراد جاں بحق

بارش کے دوران بجلی کے کھمبوں سے کرنٹ لگنے سے 4 افراد بھی جاں بحق ہوگئے۔ کلفٹن بوٹ بیسن کے قریب کرنٹ لگنے سے 30 سالہ شخص جاں بحق ہوگیا جس کی لاش کو جناح اسپتال منتقل کردیا گیا۔ ناظم آباد خاموش کالونی، ڈیفنس فیز فائیو اور گلستان جوہر بلاک 19 میں بھی کرنٹ لگنے سے 3 افراد جاں بحق ہوگئے۔

اسکولز کی تعطیل کا اعلان

محکمہ تعلیم سندھ نے کل منگل کو صوبے بھر میں بارشوں کے پیش نظر تمام سرکاری و نجی اسکولز میں عام تعطیل کا اعلان کردیا۔ سیکریٹری تعلیم قاضی شاہد پرویز نے تمام ضلعی و تعلقہ افسران کو ہدایت کی کہ افسران اپنے اپنے علاقوں میں جائیں اور اسکولوں سے فوری پانی نکلوائیں، کسی بھی اسکول کی چھت پر پانی جمع نہیں ہونا چاہیے اور کوئی کوتاہی برداشت نہیں کی جائے گی۔

سندھ کے دیگر شہروں حیدرآباد، سانگھڑ، نوابشاہ، ٹنڈوالہیار، ٹنڈومحمدخان، میرپورخاص ، تھرپارکر میں بھی گرج چمک اور تیز ہواؤں کے ساتھ بارش ہوئی۔ محکمہ موسمیات کے مطابق حیدرآباد شہر میں 188 ملی میٹر بارش رکارڈ کی گئی۔

سیلابی کیفیت کا خطرہ

محکمہ موسمیات نے کراچی سمیت سندھ کے دیگر شہروں کے لئے اربن فلڈنگ کا الرٹ جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگلے 12 سے 24 گھنٹوں کے دوران مون سون بارشوں کا سسٹم سندھ پر اثر انداز ہوگا اور موسلا دھار بارش ہوسکتی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *