پشاورتاطورخم خیبرپاس اکنامک کوریڈورمنصوبہ تیار

۔49ارب تخمینی لاگت کے منصوبہ کاپی سی ون منظوری کے لیے وفاق کو بھیج دیا گیا  

اسلام آباد(رہورٹ:  نعمت اللّٰہ بخاری) پشاورتاطورخم خیبر پاس اکنامک کوریڈور تعمیر کرنےکافیصلہ کیا گیا ہے۔اعلٰی سطحی اجلاس میں مجوزہ منصوبے کی جزئیات پر تفصیلی غور کیا۔49 ارب روپےمالیتی منصوبے تعنیر سے علاقےمیں سیاسی سماجی ومعاشی ترقی کےنئے باب کھلیں گے۔ پشاورطورخم اکنامک کوریڈور دو مرحلوں میں مکمل کیا جائیگا۔پشاور طورلم مجوزہ اکنامک کوریڈور میں بین الاقوامی معیار کے موٹروے کی تیاری دستیاب انفرااسٹرکچر میں بہتری اور نقشے کے مطابق مجوزہ اکنامک کوریڈور کے راستے میں آنے والی رکاوٹیں اور تجاوزات کےخاتمےکے ساتھ ساتھ خطے میں نئے کاروباری مراکز صنعتوں کے قیام اور منڈیوں تک رسائی کو آسان اور سہل بنایا جائے گا۔اعلٰی سطحی اجلاس میں مجوزہ منصوبے پر آنے والی تخمینی مالیت 49 ارب روپے ہوگی۔ اجلاس میں اس منصوبے کا پی سی ون تیار کرکے وفاقی وزارت منصوبہ بندی ترقی و اصلاحات کو ایکنک کی فوری منظوری کے  لٰئے بھیجا جارہا ہے۔

خیبرپاس اکنامک کوریڈور اپنی نوعیت کاواحد منصوبہ ہوگاجوعالمی بینک اور بین الاقوامی مالیاتی اداروں کی مدد سے تعمیر کیا جائےگا۔مجوزہ منصوبے کی دومرحلوں میں تعمیر کا عندیہ دیا گیا ہے۔ذرائع کے مطابق پہلے مرحلے میں پشاوربراستہ کارخانو چیکہوسٹ تا جمرود جبکہ دوسرے مرحلے میں جمرود براستہ لنڈی کوتل تاطورخم پاک افغان بارڈرموجودہ سڑک کو بین الاقوامی معیار کےمطابق کشادہ کرکے تجاوزات سےپاک موٹروے بنایاجائےگا۔دوسری جانب پجگی روڈ براستہ ورسک روڈتاطورخم سڑک تعمیر کرکے مجوزہ اکنامک کوریڈورسے منسلک کیا جائےگا۔ ذرائع کے مطابق خیبرپاس اکنامک جوریڈور کی تعمیر سے نہ صرف پاک افغان بارڈرتک موجودہ مسافت کم ہوگی بلکہ ذرائع نقل وحمل میں وسعت پیدا ہوگی اوراور بین القبائلی اضلاع کے عوام کو صوبے کے دیگرعلاقوں تک رسائی میں آسانی ہوگی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *