احتساب عدالت نے مریم نواز کی طلبی کا سمن بھجوادیا

ایون فیلڈ ریفرنس (لندن فلیٹس) میں جعلی ٹرسٹ ڈیڈ کے حوالے سے احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے مریم نواز کو نوٹس جاری کرتے ہوئے 19 جولائی کو عدالت میں طلب کیا ہے۔

ذرائع کے مطابق جاری کردہ سمن میں ہدایت دی گئی ہے کہ وہ ذاتی حیثیت میں 19 جولائی 2019 کو پیش ہوں۔

مریم نواز شریف نے گزشتہ روز سماجی رابطے کی ویب سائٹ ’ٹوئٹر‘ پر جاری کردہ اپنے پیغام میں عوام الناس سے رائے طلب کی تھی کہ انہیں مشورہ دیا جائے کہ وہ نیب عدالت جائیں یا نہ جائیں؟

آپ سے مشورہ چاہتی ہوں کہ مجھے ایک ثابت شدہ انتقام کے سامنے پیش ہونے کا بائیکاٹ کرنا چاہیئے یا پیش ہو کر NAB عدالت میں کھڑے ہو کر دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی کر دینا چاہئے ؟ بلانا ہے تو اپنے رسک پر بلانا! میری باتیں نا سن سکو گے نہ سہ سکو گے! یہ نا ہو کہ پھر سر پیٹتے رہ جاؤ!

میری پریس کانفرنس میں تمام سازشیں بے نقاب ہونے کے بعد گھبراہٹ میں حکومت نے میرے خلاف ایک اور مقدمہ قائم کردیا ۔
میں عوام سے پوچھتی ہوں کہ میرے سوالات کے جواب ملنے کی بجائے کیا مجھےاس NAB میں پیش ہونا چاہیئے جو آڈیو/ویڈیو کے زریعے یرغمال ہو؟

مریم نواز کا دعویٰ تھا کہ پریس کانفرنس کے بعد گھبراہٹ میں حکومت نے ان کے خلاف ایک اور مقدمہ قائم کردیا ہے۔

نیب کے ڈپٹی پراسیکیوٹر جنرل نے گزشتہ روز احتساب عدالت میں درخواست جمع کرائی تھی جس میں جعلی ٹرسٹ ڈیڈ پیش کرنے پر مریم نواز کے خلاف کارروائی کرنے کی استدعا کی گئی ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق نیب حکام کا استدلال ہے کہ جعلی ٹرسٹ ڈیڈ پیش کرنے پرمریم نواز، نیب آرڈی ننس کی سیکشن تھری اے کی مجرم قرار پاتی ہیں جس کے تحت پانچ سال کی سزا ہے۔

احتساب عدالت نے گزشتہ سال چھ جولائی کو سابق وزیر اعظم نواز شریف اور ان کی صاحبزادی مریم نواز کو ایون فیلڈ پراپرٹی ریفرنس میں بالترتیب دس سال اور سات سال قید کی سزا سنائی تھی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *