پاکستان کے ہاتھوں افغانستان کو شکست

لیڈز(ویب ڈیسک)آئی سی سی کرکٹ ورلڈ کپ 2019ء کے 36 ویں میچ میں دلچسپ اور سنسنی خیز مقابلے کے بعد پاکستان نے افغانستان کو 3 کٹوں سے ہرادیا۔

عماد وسیم نے مشکل صورتحال میں ناقابل شکست 49 رنز بناکر ٹیم کی جیت میں اہم کردار ادا کیا۔

افغانستان نے پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے 228 رنز کا ہدف دیا، جو پاکستان نے آخری اوور کی چوتھی گیند پر حاصل کیا۔

لیڈز میں ہدف کے تعاقب میں اوپنر فخر زمان کو مجیب الرحمان نے میچ کی دوسری ہی گیند پر ایل بی ڈبلیو آؤٹ کردیا۔

اننگز کی ابتداء ہی میں نقصان اٹھانے کے بعد امام الحق اور نئے آنے والے بیٹسمین بابر اعظم نے ذمہ دارانہ اور محتاط انداز میں اننگز کو آگے بڑھایا اور ٹیم کا اسکور 72 رنز تک پہنچادیا۔

اس موقع پر امام الحق، محمد نبی کی گیند کو کریز سے باہر نکل کر کھیلنے کی کوشش میں اسٹمپ آؤٹ ہوگئے۔ امام الحق 36 رنز بناکر آؤٹ ہوئے۔

افغانستان کو ایک اور بڑی کامیابی اس وقت ملی جب محمد نبی نے ان فارم بیٹسمین بابر اعظم کو 45 کے اسکور پر کلین بولڈ کردیا۔

سینئر بیٹسمین محمد حفیظ بھی افغان اسپنرز کے سامنے بے بس نظر آئے اور 35 گیندوں پر 19 رنز بناکر مجیب الرحمان کا شکار ہوگئے۔

ان فارم بیٹسمین حارث سہیل بھی لمبی اننگز نہ کھیل سکے اور 27 رنز بناکر راشد خان کی گیند پر ایل بی ڈبلیو ہوگئے۔

کپتان سرفراز احمد غیرضروری طور پر دوسرا رن لینے کی کوشش میں اپنی وکٹ گنوابیٹھے، وہ 18 رنز کی اننگز کھیل کر آؤٹ ہوئے۔

شاداب خان بھی دوسرا رن لیتے ہوئے آؤٹ ہوئے۔

اس سے قبل ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے افغانستان نے پاکستان کو جیت کے لئے 228 رنز کا ہدف دیا ہے۔

لیڈز میں افغان ٹیم کی اننگز کا آغاز اچھا نہ رہا، شاہین شاہ آفریدی نے اپنے پہلے ہی اوور میں اوپنر گلبدین نائب اور ون ڈاؤن پوزیشن پر آنے والے حشمت اللہ شاہدی کو یکے بعد دیگرے آؤٹ کرکے میدان بدر کیا۔

میچ کے 12 ویں اوور میں عماد وسم نے افغانستان کی تیسری وکٹ حاصل کی، انہوں نے سیٹ بیٹسمین رحمت شاہ کو 35 کے انفرادی اسکور پر پویلین روانہ کیا۔

اکرام علی خیل اور اصغرافغان نے چوتھی وکٹ کی شراکت میں 64 رنز بناکر ٹیم کی پوزیشن کو بہتر کیا لیکن اصغر افغان 42 رنز بناکر شاداب خان کی گیند پر کلین بولڈ ہوگئے۔

اگلے ہی اوور میں عماد وسیم نے اکرام علی خیل کو 24 کے اسکور پر پویلین واپس بھیج دیا۔

محمد نبی 16 رنز بناکر وہاب ریاض کی گیند پر محمد عامر کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوئے۔ اُس وقت ٹیم کا اسکور 167 رنز تھا۔

نجیب اللہ زدران نے پاکستانی بولرز کے سامنے بھرپور مزاحمت کی لیکن جب ان کا انفرادی اسکور 42 پر پہنچا تو شاہین آفریدی نے کلین بولڈ کردیا، شاہین کی یہ تیسری وکٹ تھی۔

شاہین شاہ آفریدی نے اپنا چوتھا شکار راشد خان کو بنایا وہ 8 رنز پر فخرزمان کو کیچ دے بیٹھے۔

حامد حسن کو صرف ایک رن پر وہاب ریاض نے کلین بولڈ کرکے پویلین کی راہ دکھائی۔

یوں افغانستان نے مقررہ 50 اوورز میں 9 وکٹوں کے نقصان پر 227 رنز بنائے۔

پاکستان کی طرف سے شاہین آفریدی سب سے کامیاب بولر رہے، انہوں نے 47 رنز کے عوض 4 وکٹیں حاصل کیں۔

عماد وسیم اور وہاب ریاض نے دو، دو جبکہ شاداب خان نے ایک وکٹ حاصل کی.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *