شمالی وزیرستان میں دہشت گرد حملےکی شدیدمذمت

اسلام آباد (نیوژڈیسک )صدرمملکت عارف علوی، وزیراعظم عمران خان و دیگر  نے شمالی وزیرستان میں دہشت گرد حملےکی شدیدمذمت کی ہے۔ دھماکے میں پاک فوج کےتین افسران اور ایک جوان شہید ہوئے ہیں۔

صدر مملکت نے واقعے پرگہرے دکھ اورغم کااظہار کرتےہوئے کہا کہ شرپسند عناصر قبائلی علاقوں کے امن کی بحالی کےدشمن ہیں۔ پوری قوم ان ناپاک سازشوں کے خلاف متحد ہے

وزیراعظم عمران خان نے بھی خاڑکمرمیں بارودی سرنگ دھماکے کی مذمت کی۔ عمران خان نے شہداء کے خاندانوں سے تعزیت کا اظہار کرتے ہوئے زخمیوں کی جلدصحت یابی کےلیےدعا کی ہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ وہ فوجی جوانوں کی بہادری اورقربانیوں کوسلام پیش کرتے ہیں۔ پوری قوم اپنے جوانوں کے پیچھے کھڑی ہے۔چند دشمن عناصر قبائلی علاقوں کےغیور عوام کو ورغلا رہےہیں۔ ریاست ان عناصر کو امن میں خلل ڈالنےکی اجازت نہیں دے گی۔

وزیرا عظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان کاردعمل میں کہنا ہے کہ واقعے کی ذمے داری محسن داوڑ اور علی وزیر پر عائد ہوتی ہے، دونوں کے چہرے آج قوم کے سامنے بے نقاب ہوگئے۔

انہوں نے کہا کہ جن دہشتگردوں کو چھڑایا گیا، اگر انہیں نہ چھڑایا جاتا تو آج یہ سانحہ رونما نہ ہوتا،سیاسی لیڈر شپ کو چاہیے کہ شمالی وزیرستان کے آپریشن میں قوم کے ساتھ کھڑی ہو۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے ملتان میں میڈيا سے گفتگو کرتےہوئے کہا کہ دیکھنےکی بات ہے کہ وزیرستان کو محفوظ کس نے بنایا اور کونسا طبقہ ہے جو غیر ملکی ایجنسیوں کے اشاروں پر وہاں افرا تفری پھیلا رہا ہے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *