خیبر پختون خوا میں سرکاری سطح پر آج عید الفطر منائی جارہی ہے

اسلام آباد ( ویب ڈیسک)وفاقی وزیر سائنس و ٹیکنالوجی فواد چوہدری کی کوششوں کے باوجود پاکستان میں ایک عید منانے پر اتفاق نہ ہو سکا۔

نئےپاکستان میں سرکاری طور پر 2 عیدیں ہوں گی، خیبر پختون خوا کی حکومت نے آج عید الفطر منانے کا اعلان کیا ہے، ملک بھر میں بوہری برادری آج عید الفطر مذہبی جوش و خروش سے منا رہی ہے، جبکہ مرکزی رویت ہلال کمیٹی عید کا چاند دیکھنے کے لیے آج اجلاس منعقد کرے گی جس میں کل یا پرسوں عید منانے کا فیصلہ کیا جائے گا۔

خیبر پختون خوا میں سرکاری سطح پر آج عید الفطر منائی جارہی ہے۔

خیبر پختون خوا حکومت نے اپنی ہی وفاقی حکومت کے فیصلے کو رد کر کے پشاور کی غیر سرکاری رویت ہلال کمیٹی کے سربراہ مفتی شہاب الدین پوپلزئی کے اعلان کی توثیق کر دی۔

صوبائی دارالحکومت پشاور اور دوسرے شہروں میں نمازِ عید کے اجتماعات منعقد کیے گئے جن میں ملکی سلامتی کے لیے دعائیں مانگی گئیں۔

صوبے بھر میں نماز عید الفطر کے چھوٹے بڑے اجتماعات منعقد ہوئے، سب سے بڑا اجتماع پشاور کے چارسدہ روڈ پر ہوا۔

شہریوں کی بڑی تعداد نے نماز عید میں شرکت کی، اس موقع پر سیکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے تھے۔

گورنرخیبرپختونخوا شاہ فرمان شہر کے باہر ہونے کے باعث آج گورنر ہاوس پشاور میں نماز عید ادا نہیں کرسکے۔

اس حوالے سے گورنر شاہ فرمان کا کہنا تھا کہ میں صوبائی حکومت کے عید کے فیصلے کے ساتھ ہوں اور گورنر ہاؤس میں ہوتا تو نماز عید ادا کرتا، نتھیاگلی میں کہیں نماز عید ادا ہوئی تو پڑھنے جاؤں گا۔

واضح رہے کہ خیبر پختون خوا حکومت نے گزشتہ رات 12 بجے سرکاری سطح پر آج عید منانے کا اعلان کرتے ہوئے پشاور کی غیر سرکاری رویتِ ہلال کمیٹی کے سربراہ مفتی شہاب الدین پوپلزئی کے اعلان کی توثیق کردی۔

خیبر پختون خوا کے وزیر اطلاعات شوکت یوسف زئی کا میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ پشاور کی مساجد میں خیبر پختون خوا کے مختلف علاقوں سے چاند دیکھنے کی شہادتیں ملی ہیں، جس سے مرکزی رویت ہلال کمیٹی کو بھی آگاہ کر دیا ہے، مگر مرکزی رویت ہلال والے خیبر پختون خوا والوں کی شہادتیں نہیں مانتے۔

انہوں نے مزید کہا کہ یہاں چاند آ بھی جائے تو وہ لوگ نہیں مانتے، روزے ان کے ساتھ شروع کئے تھے مگر خیبر پختون خوا میں عید ایک ہی منائیں گےیعنی ایک روزہ ہم کھا چکے ہیں۔

شوکت یوسف زئی نے یہ بھی کہا کہ ہر بار صوبہ خیبر پختون خوا میں 2 عیدیں ہوتی ہیں،اس بار اپنے صوبے میں ایک ساتھ عید منا کر اظہار یکِ جہتی کر رہے ہیں۔

اس سے قبل مسجد قاسم علی خان میں مفتی شہاب الدین پوپلزئی کی زیرِ صدارت مسجد قاسم علی خان میں غیر سرکاری رویتِ ہلال کمیٹی کا اجلاس ہوا۔

کمیٹی نے 100 سے زائد جگہ چاند دیکھنے کی شہادتوں کی بنیاد پر عید الفطر منانے کا اعلان کیا۔

اجلاس میں مولانا خیر البشر، قاری عبدالرؤف، مولانا جمال مشوانی سمیت دیگر علماء نے شرکت کی جس میں پشاور، مردان، کرک، لکی مروت، میر علی، بنوں، ہنگو، ڈومیل، تنگی میں چاند نظرآنے کی شہادتیں موصول ہوئیں۔

ادھر شوال کا چاند دیکھنے کے لیے مرکزی رویت ہلال کمیٹی کا اجلاس آج 29 رمضان المبارک کو کراچی میں ہو گا۔

اجلاس کی صدارت چیئرمین مرکزی رویت ہلال کمیٹی مفتی منیب الرحمٰن کریں گے، جبکہ زونل یا ضلعی کمیٹیوں کے اجلاس متعلقہ مقامات پر ہوں گے۔

مرکزی رویتِ ہلال کمیٹی شہادتوں کی بنیاد پر عید الفطر کا چاند نظر آنے یا نہ آنے کا اعلان کیا جائے گا۔

وفاقی وزیر سائنس و ٹیکنالوجی فواد چوہدری کی کوششوں کے باوجود پاکستان میں ایک عید منانے پر اتفاق نہ ہو سکا۔

دوسری جانب سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات میں آج عید الفطر منائی جارہی ہے، مسجد الحرام میں عید الفطر کی نماز کی ادائیگی کی گئی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *