پلاٹنگ کے نام پر لوٹنے کا نیا طریقہ۔ کڑوروں کا فاٸدہ حاصل کر کےاپنا بینک اکاٶنٹ مظبوط

 

کراچی ( نیوز رپورٹ)  ظلع ملیر کے کم آمدنی والے افراد کو پلاٹنگ کے نام پر لوٹنے کا نیا طریقہ ملیر میں سرکاری زمینوں پر قبضہ مافیہ نے نئے طریقے سے کام کرنا شروع کردیا ذرائع کے مطابق بلڈر نے نئے طریقے سے لوگوں کو لوٹنے کا طریقہ شروع کردیا کم أمدنی والے افراد کو سستے پلاٹ چھ سے سات لاکھ میں دیۓ گۓ کچھ عرصے گذرنے کے بعدجن لوگوں سے پیسہ لیا ہوا تھا ان کو کہا گیا کہ زمین پہ مسٸلہ ہو گیا مگر ہم یہ مسٸلہ جلد حل کروا لے گے۔۔جب لوگ اپنی رقم کا تقاضہ کرتے ہیں تو کہتا ہے کہ آپ کے۔۔6 سے 8 لاکھ روپے لگے ہوئے میرے کروڑوں روپے پروجیکٹ پر لگے ہوۓ ہیں۔ جلد ہی کلیٸر کرا لو گا ۔یا کسی نۓ پروجیکٹ میں پلاٹ دو گا۔۔ لوگوں نے نام نہ چھاپنے اور سامنے نہ آنے کی شرط پر بتایا: ملیر کورٹ کے سامنے قادری سوسائٹی میں جس زمین پر پلاٹنگ شروع کی وہ زمین اسٹیٹ بینک کی ملکییت ہیں۔۔
مذکورہ زمین پر چھ سے سات لاکھ روپے فی پلاٹ لوگو کو بیچا گیا اب کہا جا رہا ہے مسٸلہ ہے لوگوں کا کہنا ہیں کہ ہم بلڈر سجاد حسین کے چنگل میں پھنسے ہوۓ ہیں دوسرے لوگ اس بلڈر کے باتوں میں أکر اپنے پیسے نہ برباد کرے۔۔عوام کا کہنا ہے کہ بلڈر سجاد حسین ہماری رقم واپس نہیں کر رہا ہے با اثر ہونے کی وجہ سے ہم اس بلڈر کا کچھ کر نہیں سکتے۔۔قابل اعتماد ذرااٸع کا کہنا یے کہ بلڈر سجادحسین نے قادری پروجیکٹ سے کڑوروں کا فاٸدہ حاصل کر کےاپنا بینک اکاٶنٹ تو مظبوط کر لیا مگر غریب الاٹیوں کو أسرے ہر رکھا ہوا ہے کہ سب اچھا ہو جاۓ گا

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *