جنگل میں منگل’ سعودی عرب کے شہری نے پہاڑ کاٹ کر اسٹیڈیم بنا ڈالا

جازان (ویب ڈیسک) سعودی عرب کے ایک مقامی اور مہم جو شہری نے پہاڑی علاقے میں چٹانیں کاٹ کر ایک وسیع وعریض کھیل کا میدان تیار کر کے حیران کر دیا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق سعودی عرب کے شہری محمد حربان الحریصی نے مملکت کے جنوبی علاقے جازان کی الدائر گورنری میں جبال الحشر کے مقام پر اپنی اراضی میں اسٹیڈیم بنا دیا۔ کئی سال کی محنت کے بعد الحریصی نے اپنی زمین میں 15 ہزار مربع میٹر پر پھیلا اسٹیڈیم تیار کر کے سیاحوں کے لیے علاقہ مزید پر کشش بنا دیا۔

اس اسٹیڈیم میں 10 ہزار افراد کے بیٹھنے کی گنجائش موجود ہے۔ یہاں پر کھیلوں کے مقابلوں کے ساتھ ساتھ دیگر عوامی تقریبات بھی منعقد کی جا سکتی ہیں۔

 محمد الحریصی نے بتایا کہ پہاڑی علاقے میں اسٹیڈیم تیار کرنا اس کا شوق تھا اور وہ اپنا شوق پورا کرنے کے لیے اس سے قبل دو تجربات میں ناکام بھی ہوچکا ہے۔ اس نے پہلا اسٹیڈیم پہاڑ کی چوٹی پر بنانے کی کوشش کی مگر یہ جگہ اسٹیڈیم کے لیے مناسب نہیں تھی۔ وہاں پر کام ادھورا چھوڑ دیا اور ایک اورجگہ اسٹیڈیم کی تیاری کا فیصلہ کیا مگر وہاں پر جگہ تنگ ہونے کے باعث کام چھوڑ دیا گیا۔

اب یہ تیسرا اور کامیاب تجربہ اس جگہ کیا۔ اسٹیڈیم کے لیے زمین خرید کی گئی۔ اس کے بعد اس کی کھدائی شروع کی گئی۔ یہاں پر کھیل کے مقابلوں کے انعقاد کے لیے اسٹیڈیم سے منسلک دیگر سہولیات بھی فراہم کی گئی ہیں۔ کھلاڑیوں کے لیے یونی فارم تبدیل کرنے کے لیے کمرے بنائے گئے ہیں۔ انتظامیہ کے لیے کمرے مختص ہیں۔ تھیٹر اور نمائش گاہیں بنائی گئی ہیں۔ وی آئی پی لائونج، پارکنگ اسٹینڈ، کیفے اور ہوٹل اور دیگر سہولیات بھی فراہم کی جاتی ہیں۔

ادھر فوٹو گرافر حسن الحریصی نے چٹانوں کے درمیان اسٹیڈیم کے بارے میں بتایا کہ اسٹیڈیم کا تخیل 2003ء میں پیدا ہوا۔ اس کی تیاری میں ایک ملین ریال سے زاید رقم خرچ ہوچکی ہے۔ پہاڑنوں کی کٹائی، اس سے ملحقہ تعمیرات، روشنی کے انتظام اور دیگر ضروریات کے لیے تنصیبات تیار کی گئیں۔ اب تک اس اسٹیڈیم میں 11 مقابلے منعقد ہو چکے ہیں۔ یہاں پرآخری کھیل کا مقابلہ جزیرعرب کی ٹیموں کے درمیان علاقائی گورنر فٹ بال چیمپیئن شپ منعقد کیا گیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *