مسلمان کو دیکھ کر ہندو پنڈت نےآنکھیں بند کرلیں: ویڈیو وائرل ہوگئی

نئی دہلی (ویب ڈیسک) بھارت میں برسراقتدار انتہا پسند ہندو جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی اور اس کے نامزد وزیراعظم نریندر مودی نے ملک میں مذہبی منافرت کو اس قدر بڑھاوا دیا ہے کہ جہاں ایک جانب روزآنہ کی بنیاد پر مسلمانوں کو ہجومی تشدد کے ذریعے قتل اور زخمی کیا جا رہا ہے تو وہیں اب جنونی ہندو پنڈت نے مسلمان کو دیکھنے تک سے انکار کر کے مزید جلتی پر تیل کا کام کرنا شروع کردیا ہے۔

بھارتی ذرائع ابلاغ کے مطابق جنونی ہندوؤں کی انتہا پسند تنظیم ’ہم ہندو‘ کے بانی پنڈت اجے گوتم نے گزشتہ روز ایک بھارتی ٹی وی چینل پر ہونے والی بحث کے دوران اس وقت اپنی آنکھوں پر ہاتھ رکھ لیا جب ان کے سامنے ایک مسلمان ٹی وی اینکر آگیا۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹس پروائرل ہونے والی وڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ مباحثہ ختم ہوتے ہی جب دوسرے پروگرام کی ابتدا میں مسلمان اینکر سعود محمد خالد ٹی وی اسکرین پر آتے ہیں تو پنڈت گوتم اپنی نفرت کے اظہار کے لیے آنکھوں پر ہاتھ رکھ لیتا ہے۔

انسان اور انسانیت پر یقین رکھنے والے بھارتیوں کی اکثریت گزشتہ روز سے سماجی رابطے کی ویب سائٹس پر استفسار کررہی ہے کہ کیا کوئی شخص اس حد تک بھی کسی سے اتنی نفرت کرسکتا ہے کہ اسے اسکرین پہ دیکھ کر آنکھیں ہی بند کرلے؟

بھارت کے متعدد افراد نے انسانیت سے گری ہوئی نفرت انگیز حرکت پر   کی انتظامیہ سے باقاعدہ یہ پوچھا کہ انہوں نے ایسے شخص کو اپنے اسٹوڈیو میں کیوں بلایا؟ اور جب اس نے ایسی حرکت کی تو اسے نیوز روم سے دھکے دے کر کیوں نہیں نکالا؟

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *