نورالحسن حرکت قلب بند ہونے سے لاہور میں انتقال کر گئے ہیں۔

لاہور( این اے) خاندانی ذرائع نے اس افسوسناک خبر کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ وہ سرجری کے بعد 10 روز سے آئی سی یو میں زیر علاج تھے۔

انتقال کی خبر سے علاقہ کی فضا سوگوار ہے اور اہل محلہ نے تدفین کی تیاریاں شروع کردی ہیں۔

انہیں آرمی چیف کی ہدایت پر پنجاب کی تحصیل صادق آباد سے لاہور منتقل کرنے کے لیے ائر ایمبولینس کی سہولت فراہم کی گئی تھی اور شالیمار اسپتال میں ڈاکٹر معاذ کی زیر نگرانی ان کا آپریشن ہوا تھا۔

لاہور میں شالیمار اسپتال کے ڈاکٹر معاذ بلا معاوضہ ان کا علاج کر رہے تھے اور کامیاب آپریشن کے بعد میڈیکل ٹیم نے بتایا تھا کہ مریض 15 روز میں چلنا پھرنا شروع کردے گا۔

نور الحسن کو 18 جون 2019 کو اسپتال منتقل کیا گیا اور 28 جون کو آپریشن ہوا۔ پنجاب کے ضلع رحیم یار خان کی تحصیل صادق آباد سے لاہور منتقل کرنے سے قبل تین ماہ 30 کلو وزن کم کیا گیا تھا۔

تاحال دنیا میں موٹاپے کی صرف تین کیسز ایسے ہوئے ہیں جن میں مریض کو ائر ایمبولینس کی مدد سے اسپتال منتقل کیا گیا اور نورالحسن ان میں سے ایک ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *