عراقی صدر برہم صالح نے خبردار کیا کہ اگر حالیہ بحران سے صحیح طرح نہ نمٹا گیا تو جنگ بھی چھڑ سکتی ہے

سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات کے بحری جہازوں اور تیل کی تنصیبات پر حملوں کے بعد عرب ممالک نے بین الاقوامی کمیونٹی سے مطالبہ کیا ہے کہ ایران کے خلاف سخت موقف اختیار کیا جائے۔

یہ مطالبہ سعودی عرب کے شاہ سلمان بن عبد العزیز نے مکہ میں جاری عرب ممالک کے ایک ہنگامی اجلاس میں سامنے آیا۔

تاہم ایران کے پڑوسی ملک عراق کے صدر برہم صالح نے مکہ اجلاس کے بعد جاری کیے جانے والے بیان سے اختلاف کیا ہے۔

اپنے خطاب میں عراقی صدر برہم صالح نے خبردار کیا کہ اگر حالیہ بحران سے صحیح طرح نہ نمٹا گیا تو جنگ بھی چھڑ سکتی ہے اور تمام فریق کے درمیان تعمیری مذاکرات کی ضرورت پر زور دیا ہے۔

ساتھ ہی ایران نے مکہ اجلاس کے بعد تہران پر عائد کیے جانے والے الزامات کی سختی سے تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ سعودی عرب مکہ میں منعقد ہونے والے اجلاسوں کو اپنے مقاصد کے لیے استعمال کر رہا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *